Skip to main content

Salam Aqeedat

 Salaam Aqeedat مرے کلام پہ حمد و ثناء کا سایہ ہے  مرے کریم کے لطف و عطاء کا سایہ ہے میں حمد و منقبت و نعت لکھ رہا ہوں،  میرے تخیلات شاه ھدی کا سایہ ہے لکھا ہے حسن جہاں، اُس کو پڑھ چکا ہوں  حسن کیں پہ خامس آل عبا کا سایہ ہے خدا نے ہم کو نوازا حواس خمسہ سے  یہ ہم پہ پنجتن با صفا کا سایہ ہے کوئی مریض ہو لے جا رضا کے روضے پر  وہیں طبیب ہے، دار الشفاء کا سایہ ہے سفر ہو یا ہو حضر مجھ کو کوئی خوف نہیں  کہ مجھ پہ شاہ نجف مرتضی کا سایہ ہے علی امام مرا، اور میں غلام علی  علی کی شان پر تو لافتی کا سایہ ہے علی کا نام تو حرز بدن ہے اپنے لیے  علی کے اسم پہ رب علی کا سایہ ہے ن لطف احمد مرسل بفضل آل رسول  میں خوش نصیب ہوں مجھ پر ہما کا سایہ ہے وہی ہے نفس پیمبر وہی ہے زوج بتول  علی کی ذات پر ہی ہل اتی کا سایہ ہے ریاض خلد کے سردار شبر و شبیر  حدیث پاک ہے، خیر الوریٰ کا سایہ ہے سفیر کرب و بلا، زینب حزیں پہ سلام  وہ جس کے عزم پہ خیر النسا " کا سایہ ہے تری دعا کی اجابت میں دیر کیا ہو گی  علی کا نام لے! حاجت روا کا سایہ ہے نجات پائے گا ہر دکھ سے تو نہ رہ ناشاد  کہ تجھ پہ رحمت ارض و سماء کا سایہ ہے mar

Shaan E Ali And Nabi

 Shaan  E Ali And Nabi


علی کی شان میں اللہ نے تو انما بھیجا 

علی سا ہے اگر کوئی بتا دے اُس کو کیا بھیجا؟


یہ ہے اُن کی کنیت ابوالحسن اور عرف حیدر ہے 

حبیب اللہ نے اُن کو لقب شیر خدا بھیجا


خدا کیا ہے نبی سمجھے، نبی کیا ہے علی سمجھے 

علی کیا ہے، یہ سمجھانے کی خاطر مصطفیٰ بھیجا


علی ہے کل ایماں اور علی ہے وارث قرآں 

وہی عرفان کا منبع، تبھی تو لافتی بھیجا


علی مولود کعبہ اور شہادت بھی خدا کے گھر 

اُنہی کی آل کی توصیف میں تو ہل اتی بھیجا


علی ہے فاتح بدر و احد اور ساقی کوثر 

وہی ہے فاتح خیبر، جسے خنجر دوتا بھیجا


علی ہے راکب دوش نبی اور شافع محشر 

علی کے رُوپ میں حق نے نصیری کا خُدا بھیجا


رسول اللہ جب مکے سے نکلے تھے شب ہجرت 

نبی نے اپنی مسند پر علی نقش وفا بھیجا


علی سرتاج زہرا اور علی نفس پیمبر ہے

 نبی نے جنگ خیبر میں اُنہیں تاج لوا بھیجا


قسيم النار والجنہ علی کو مرتبہ دے کر 

خدا نے ہادی کامل ہمیں اک رہنما بھیجا


امام الاولین و آخریں، مولا علی کی ذات 

امیر المومنین اُن کو خدا نے ہی بنا بھیجا


علی ہے حق سے وابستہ، تو حق پیوستہ ہے اُن سے 

حقیقت میں انہیں حق نے بنا کر حق نما بھیجا


علی مشکل گشا ہیں اس لیے جب بھی پڑی مشکل 

تو میں نے اپنی مشکل کو سوئے مشکل گشا بھیجا


ترا لطف و کرم، آقا! رہے ناشاد پر ہر دم 

یہی ہے مدعا مولا! تجھے صبح و مسا بھیجا


Ali ki shaan mein Allah ne to انما bheja

Ali sa hai agar koi bta day uss ko kya bheja ?


yeh hai unn ki kuniat abwalhsn aur urf Haider hai

habib Allah ne unn ko laqab sher kkhuda bheja


kkhuda kya hai nabi samjhay, nabi kya hai Ali samjhay

Ali kya hai, yeh samjhane ki khatir mustafa bheja


Ali hai kal ayman aur Ali hai waris qraan

wohi Urfan ka manba, tabhi to لافتی bheja


Ali molod kaaba aur shahadat bhi kkhuda ke ghar

aُnhi ki all ki tauseef mein to hil at‬ bheja


Ali hai faateh badar o ahad aur saqi kusar

wohi hai faateh Khyber , jisay khanjar dutta bheja


Ali hai raakib dosh nabi aur Shafey Mahshar

Ali ke ruop mein haq ne Nasiry ka khuda bheja


rasool Allah jab mukkay se niklay thay shab hijrat

nabi ne apni masnad par Ali naqsh wafa bheja


Ali sartaaj Zohra aur Ali nafs peyambar hai

nabi ne jung Khyber mein unhen taaj lawa bheja


Qaseem النار والجنہ Ali ko martaba day kar

kkhuda ne haadi kaamil hamein ik rehnuma bheja


imam الاولین o آخریں, maula Ali ki zaat

Ameer al-momineen unn ko kkhuda ne hi bana bheja


Ali hai haq se wabasta, to haq paiwastah hai unn se

haqeeqat mein inhen haq ne bana kar haq numa bheja


Ali mushkil گشا hain is liye jab bhi pari mushkil

to mein ne apni mushkil ko soye mushkil گشا bheja


tra lutaf o karam, aaqa! rahay Nashad par har dam

yahi hai mudda maula! tujhe subah o massa bheja


على مشکل کشا شیر خدا ہے

علی ہی ساقی کوثر بجا ہے


نبی نے جانشیں اپنا بنایا

خدا کی اُن پہ رحمت اتما ہے


ولادت ہو گئی کعبے میں اُن کی

کسے دنیا میں یہ رتبہ ملا ہے


محمد اور على از نور واحد

یہ دونوں اصل میں نور خدا ہے


محمد عالم علم لانی

سلونی تو علی ہی کی ندا ہے


غدیر خم میں اعلان خلافت 

ز حکم تب، محمد نے کیاہے


علی بر دست احمد، چشم بد دور

 غدیر خم میں ہر لب پر صدا ہے


 محمد علم کا ہے شہر بے شک 

علی ہی باب اُس کا بر ملا ہے


 نبي معراج تک پہنچے ہیں شک کیا؟ 

علی بھی زینت عرش علی ہے


شب ہجرت نبی نے اپنا منصب

 علی کو مرضی رب سے دیا ہے


 على مصطفی من نور واحد

 حدیث پاک سے واضح ہوا ہے


ادھر مرحب کو گھوڑے سے گرا کر

 در خیبر علی کے زیر پا ہے


عمرو ابن عبدود کو زیر کر کے 

على خندق پہ قابض ہو گیا ہے


علی سورج کو پلٹانے قادر 

نبی نے چاند کو ٹکڑے کیا ہے


على mushkil kusha sher kkhuda hai

Ali hi saqi kusar baja hai


nabi ne janshin apna banaya

kkhuda ki unn pay rehmat اتما hai


wiladat ho gayi kaabay mein unn ki

kisay duniya mein yeh rutba mila hai


Mohammad aur على az noor wahid

yeh dono asal mein noor kkhuda hai


Mohammad aalam ilm lani

salloni to Ali hi ki nida hai


Ghadir khham mein elaan khilafat

zay hukum tab, Mohammad ne kiya hai


Ali Bar dast Ahmed , chasham bad daur

Ghadir khham mein har lab par sada hai


Mohammad ilm ka hai shehar be shak

Ali hi baab uss ka Bar mila hai


nabi mairaaj tak puhanche hain shak kya ?

Ali bhi zeenat arsh Ali hai


shab hijrat nabi ne apna mansab

Ali ko marzi rab se diya hai


على mustafa mann noor wahid

hadees pak se wazeh sun-hwa hai


idhar مرحب ko ghoray se gira kar

dar Khyber Ali ke zair pa hai


umro Ibn عبدود ko zair kar ke

على khandaq pay qaabiz ho gaya hai


Ali Sooraj ko پلٹانے Qadir

nabi ne chaand ko tukre kya hai

Comments

Popular posts from this blog

300+ Best Quotes in Urdu with Images 2023

300+ Best Quotes in Urdu with Images 2023 Iss Post ma ham apky Urdu kay 300 behtreen or nayaab Quotes share karen gay. Ap tamam se guzarish ha ki is post ko apny friends or family kay sath zaroor share karen. Or hamein shukurya ada karny ka moqa den. shukurya...  

Salam Ba Hazoor Imam Hussain

 Salam Ba Hazoor Imam Hussain مہماں بنا کے گھر سے بلایا حسین کو  پھر کربلا کے بن میں بسایا حسین کو یہ قافلہ تھا کوفے کی جانب رواں دواں  کر کربلا میں گھیر کے لایا حسین کو وہ دلبر بتول تھا اور جان مصطفى  کیا جرم تھا یہی کہ بتایا حسین کو عباس اور قاسم واکبر ہوئے شہید  اصغر نے تیر کھا کے رلایا حسین کو رقم سب چل بسے ظہیر و بریر و حبیب تک  کوئی نہیں رہا تھا سہارا حسین کو تنہا نکل رہا ہے حرم سے علی کا لال  گھیرے ہوئے ہے فوج صف آراء حسین کو وہ جنگ کی، کہ بدر کا منظر دکھا دیا  ہر اک نے الامان پکارا حسین کو اتنے میں ماہ دین گہن میں چلا گی  تیغ و تبر سے تیر سے مارا حسین کو نہر فرات پاس تھی پانی نہیں  پیاسا کیا شہید دل آرا حسین کو اے کربلا حسین نے تجھ کو لہو دیا  تو نے نہ ایک قطرہ پلایا حسین کو  زہرا کے کے گلبدن کا بدن بے کفن کو  تپتی زمین پر نہ چھپایا حسین کا جس دل میں عشق سبط نبی کا سما گیا  اس دل نے پھر کبھی نہ بھلایا حسین ن کو ناشاد ناتواں کو زیارت نصیب  یہ التماس بھیجی ہے مولا حسین کو mehmaan bana ke ghar se bulaya Hussain ko phir karbalaa ke ban mein basaayaa Hussain ko yeh qaafla tha kofe k

Salam Aqeedat

 Salaam Aqeedat مرے کلام پہ حمد و ثناء کا سایہ ہے  مرے کریم کے لطف و عطاء کا سایہ ہے میں حمد و منقبت و نعت لکھ رہا ہوں،  میرے تخیلات شاه ھدی کا سایہ ہے لکھا ہے حسن جہاں، اُس کو پڑھ چکا ہوں  حسن کیں پہ خامس آل عبا کا سایہ ہے خدا نے ہم کو نوازا حواس خمسہ سے  یہ ہم پہ پنجتن با صفا کا سایہ ہے کوئی مریض ہو لے جا رضا کے روضے پر  وہیں طبیب ہے، دار الشفاء کا سایہ ہے سفر ہو یا ہو حضر مجھ کو کوئی خوف نہیں  کہ مجھ پہ شاہ نجف مرتضی کا سایہ ہے علی امام مرا، اور میں غلام علی  علی کی شان پر تو لافتی کا سایہ ہے علی کا نام تو حرز بدن ہے اپنے لیے  علی کے اسم پہ رب علی کا سایہ ہے ن لطف احمد مرسل بفضل آل رسول  میں خوش نصیب ہوں مجھ پر ہما کا سایہ ہے وہی ہے نفس پیمبر وہی ہے زوج بتول  علی کی ذات پر ہی ہل اتی کا سایہ ہے ریاض خلد کے سردار شبر و شبیر  حدیث پاک ہے، خیر الوریٰ کا سایہ ہے سفیر کرب و بلا، زینب حزیں پہ سلام  وہ جس کے عزم پہ خیر النسا " کا سایہ ہے تری دعا کی اجابت میں دیر کیا ہو گی  علی کا نام لے! حاجت روا کا سایہ ہے نجات پائے گا ہر دکھ سے تو نہ رہ ناشاد  کہ تجھ پہ رحمت ارض و سماء کا سایہ ہے mar