Skip to main content

Salam Aqeedat

 Salaam Aqeedat مرے کلام پہ حمد و ثناء کا سایہ ہے  مرے کریم کے لطف و عطاء کا سایہ ہے میں حمد و منقبت و نعت لکھ رہا ہوں،  میرے تخیلات شاه ھدی کا سایہ ہے لکھا ہے حسن جہاں، اُس کو پڑھ چکا ہوں  حسن کیں پہ خامس آل عبا کا سایہ ہے خدا نے ہم کو نوازا حواس خمسہ سے  یہ ہم پہ پنجتن با صفا کا سایہ ہے کوئی مریض ہو لے جا رضا کے روضے پر  وہیں طبیب ہے، دار الشفاء کا سایہ ہے سفر ہو یا ہو حضر مجھ کو کوئی خوف نہیں  کہ مجھ پہ شاہ نجف مرتضی کا سایہ ہے علی امام مرا، اور میں غلام علی  علی کی شان پر تو لافتی کا سایہ ہے علی کا نام تو حرز بدن ہے اپنے لیے  علی کے اسم پہ رب علی کا سایہ ہے ن لطف احمد مرسل بفضل آل رسول  میں خوش نصیب ہوں مجھ پر ہما کا سایہ ہے وہی ہے نفس پیمبر وہی ہے زوج بتول  علی کی ذات پر ہی ہل اتی کا سایہ ہے ریاض خلد کے سردار شبر و شبیر  حدیث پاک ہے، خیر الوریٰ کا سایہ ہے سفیر کرب و بلا، زینب حزیں پہ سلام  وہ جس کے عزم پہ خیر النسا " کا سایہ ہے تری دعا کی اجابت میں دیر کیا ہو گی  علی کا نام لے! حاجت روا کا سایہ ہے نجات پائے گا ہر دکھ سے تو نہ رہ ناشاد  کہ تجھ پہ رحمت ارض و سماء کا سایہ ہے mar

New Hamd Urdu

 New Hamd Urdu

mujhe fakhr –apne naseeb par mujhe Faiz hamd sun-hwa ataa
mein hon mutarrif, mein haqeer hon, تراحق mein kaisay karoon ada

to hamid hai, to Majeed hai, to lateef hai, to rasheed hai
tri hamd kaisay bayan ho, to hi is ki terhan mujhe bta

tri bargaah mein hon khara, marey charah gir mujhe bheek day
to ghanni hai, to hi Muqeet hai, mein tre hi derka hon ik gadda

to Hafeez hai, to ghafoor hai, to hakeem hai, to Raheem hai
tri rehmaton ka sawal hai, koi aur reham kere ga kya

to Sami hai, to Baseer hai, to khaibar hai, to Aleem hai
to hi jaan laita hai raaz dil, koi bhaid tujh se nah choup saka

jo mareez hai, jo aleel hain, unhen kya gharz hai tabeb se
tra naam sab ke liye dawa, tra zikar sab ke liye Shifa

meri lagzishon ka hisaab kya, mein Ghareeq behar gunah hon
tri nematon ka shumaar to mein kisi terhan se nah kar saka

dar mustafa ko bhi choom lon, tre ghar ka phir se tuwaf ho
meri khawahishon ko tamam kar, yahi arzoo hai marey kkhuda !

safeer Adam ko jo mein brhhon, marey dil mein hub rasool ho
marey lab pay tera hi naam ho, marey mann ka hai yahi mudda

to kareem hai, to Haleem hai, to Qawi hai, to hi azeem hai
mein haqeer o zair tha ae kkhuda, mujhe zor to ne ataa kya

tra shukar kaisay ada karoon, ke ataa yeh tairay karam se hai
meri khoobiyon ko ubhaar kar, meri khamion ko chhupa diya

nahi shaad hon mujhe shaad kar, yeh dua hai rab kabeer se
mein tre karam ka hon muntazir, mere hasb haal hai yeh dua
مجھے فخر اپنے نصیب پر مجھے فیض حمد ہوا عطا 
میں ہوں معترف، میں حقیر ہوں، تراحق میں کیسے کروں ادا

تو حمید ہے، تو مجید ہے، تو لطیف ہے، تو رشید ہے 
تری حمد کیسے بیان ہو، تو ہی اس کی طرح مجھے بتا

تری بارگاہ میں ہوں کھڑا ، مرے چارہ گر مجھے بھیک دے 
تو غنی ہے، تو ہی مقیت ہے، میں ترے ہی درکا ہوں اک گدا

تو حفیظ ہے، تو غفور ہے، تو حکیم ہے، تو رحیم ہے 
تری رحمتوں کا سوال ہے، کوئی اور رحم کرے گا کیا

تو سمیع ہے، تو بصیر ہے، تو خبیر ہے، تو علیم ہے
 تو ہی جان لیتا ہے راز دل، کوئی بھید تجھ سے نہ چھپ سکا

جو مریض ہے، جو علیل ہیں، اُنہیں کیا غرض ہے طبیب سے
 ترا نام سب کے لیے دوا، ترا ذکر سب کے لیے شفا

مری لغزشوں کا حساب کیا، میں غریق بحر گناہ ہوں
 تری نعمتوں کا شمار تو میں کسی طرح سے نہ کر سکا

در مصطفی کو بھی چوم لوں، ترے گھر کا پھر سے طواف ہو
 مری خواہشوں کو تمام کر، یہی آرزو ہے مرے خدا !

سفیر عدم کو جو میں بڑھوں، مرے دل میں حب رسول ہو 
مرے لب پہ تیرا ہی نام ہو، مرے من کا ہے یہی مدعا

تو کریم ہے، تو حلیم ہے، تو قوی ہے، تو ہی عظیم ہے 
میں حقیر و زیر تھا اے خدا، مجھے زور تو نے عطا کیا

ترا شکر کیسے ادا کروں، کہ عطا یہ تیرے کرم سے ہے 
مری خوبیوں کو اُبھار کر، مری خامیوں کو چھپا دیا

نہیں شاد ہوں مجھے شاد کر، یہ دعا ہے رب کبیر سے 
میں ترے کرم کا ہوں منتظر، میرے حسب حال ہے یہ دعا

dil ko tri talabb hai, kisi ki talabb nahi
kaisay kahoon mein tujh se ke kab se hai kab nahi

ya rab! mujhe saleeqa izhaar bakhash day
mein hamd likh raha hon, magar mujh mein dhab nahi

to mere sath sath hai sheh rigg se bhi qareeb
nazron se phir bhi daur, yeh gham be sabab nahi

meri majaal kya, ke tra jalva dekh lon
mujh mein tre nzarah ki woh taab o tab nahi

jalva giri se teri, agar tor par claim
be hosh ho gaya tha, to koi ajab nahi

mein mehv masiat hon magar tera lutaf khaas
har lamha mere sath hai, koi gazabb nahi

rehmat tri muheet yeh har lamha har ghari
tairay karam se daur koi roz o shab nahi

to ne kya khalil yeh gulzaar aag ko
namrud ko mili jo saza, be sabab nahi

moose ki parwarish hui firaon hi ke ghar
teri Raza is mein thi, su adab nahi

Yousuf ko to ne misar ka sltan bana diya
yeh teri Maslehat hi thi, naam o nasb nahi

Younis ko tairay reham o karam ka yaqeen tha
machhli ke pait mein tha magar muztarib nahi

Nashad bhi garam ka hai mohtaaj, ae graeme !
mera yeh mudda hai ayaan, zair lab nahi
دل کو تری طلب ہے، کسی کی طلب نہیں 
کیسے کہوں میں تجھ سے کہ کب سے ہے کب نہیں

یا رب! مجھے سلیقہ اظہار بخش دے 
میں حمد لکھ رہا ہوں، مگر مجھ میں ڈھب نہیں

تو میرے ساتھ ساتھ ہے شہ رگ سے بھی قریب 
نظروں سے پھر بھی دور، یہ غم بے سبب نہیں

میری مجال کیا، کہ ترا جلوہ دیکھ لوں 
مجھ میں ترے نظارہ کی وہ تاب و تب نہیں

جلوہ گری سے تیری، اگر طور پر کلیم 
بے ہوش ہو گیا تھا، تو کوئی عجب نہیں

میں محو معصیت ہوں مگر تیرا لطف خاص 
ہر لمحہ میرے ساتھ ہے، کوئی غضب نہیں

رحمت تری محیط یہ ہر لمحہ ہر گھڑی
 تیرے کرم سے دور کوئی روز و شب نہیں

تو نے کیا خلیل یہ گلزار آگ کو
 نمرود کو ملی جو سزا، بے سبب نہیں

موسی کی پرورش ہوئی فرعون ہی کے گھر 
تیری رضا اس میں تھی، سوء ادب نہیں

یوسف کو تو نے مصر کا سلطاں بنا دیا 
یہ تیری مصلحت ہی تھی، نام و نسب نہیں

یونس کو تیرے رحم و کرم کا یقین تھا 
مچھلی کے پیٹ میں تھا مگر مضطرب نہیں

ناشاد بھی گرم کا ہے محتاج، اے گریم! 
میرا یہ مدعا ہے عیاں، زیر لب نہیں

Comments

Popular posts from this blog

300+ Best Quotes in Urdu with Images 2023

300+ Best Quotes in Urdu with Images 2023 Iss Post ma ham apky Urdu kay 300 behtreen or nayaab Quotes share karen gay. Ap tamam se guzarish ha ki is post ko apny friends or family kay sath zaroor share karen. Or hamein shukurya ada karny ka moqa den. shukurya...  

Salam Ba Hazoor Imam Hussain

 Salam Ba Hazoor Imam Hussain مہماں بنا کے گھر سے بلایا حسین کو  پھر کربلا کے بن میں بسایا حسین کو یہ قافلہ تھا کوفے کی جانب رواں دواں  کر کربلا میں گھیر کے لایا حسین کو وہ دلبر بتول تھا اور جان مصطفى  کیا جرم تھا یہی کہ بتایا حسین کو عباس اور قاسم واکبر ہوئے شہید  اصغر نے تیر کھا کے رلایا حسین کو رقم سب چل بسے ظہیر و بریر و حبیب تک  کوئی نہیں رہا تھا سہارا حسین کو تنہا نکل رہا ہے حرم سے علی کا لال  گھیرے ہوئے ہے فوج صف آراء حسین کو وہ جنگ کی، کہ بدر کا منظر دکھا دیا  ہر اک نے الامان پکارا حسین کو اتنے میں ماہ دین گہن میں چلا گی  تیغ و تبر سے تیر سے مارا حسین کو نہر فرات پاس تھی پانی نہیں  پیاسا کیا شہید دل آرا حسین کو اے کربلا حسین نے تجھ کو لہو دیا  تو نے نہ ایک قطرہ پلایا حسین کو  زہرا کے کے گلبدن کا بدن بے کفن کو  تپتی زمین پر نہ چھپایا حسین کا جس دل میں عشق سبط نبی کا سما گیا  اس دل نے پھر کبھی نہ بھلایا حسین ن کو ناشاد ناتواں کو زیارت نصیب  یہ التماس بھیجی ہے مولا حسین کو mehmaan bana ke ghar se bulaya Hussain ko phir karbalaa ke ban mein basaayaa Hussain ko yeh qaafla tha kofe k

Salam Aqeedat

 Salaam Aqeedat مرے کلام پہ حمد و ثناء کا سایہ ہے  مرے کریم کے لطف و عطاء کا سایہ ہے میں حمد و منقبت و نعت لکھ رہا ہوں،  میرے تخیلات شاه ھدی کا سایہ ہے لکھا ہے حسن جہاں، اُس کو پڑھ چکا ہوں  حسن کیں پہ خامس آل عبا کا سایہ ہے خدا نے ہم کو نوازا حواس خمسہ سے  یہ ہم پہ پنجتن با صفا کا سایہ ہے کوئی مریض ہو لے جا رضا کے روضے پر  وہیں طبیب ہے، دار الشفاء کا سایہ ہے سفر ہو یا ہو حضر مجھ کو کوئی خوف نہیں  کہ مجھ پہ شاہ نجف مرتضی کا سایہ ہے علی امام مرا، اور میں غلام علی  علی کی شان پر تو لافتی کا سایہ ہے علی کا نام تو حرز بدن ہے اپنے لیے  علی کے اسم پہ رب علی کا سایہ ہے ن لطف احمد مرسل بفضل آل رسول  میں خوش نصیب ہوں مجھ پر ہما کا سایہ ہے وہی ہے نفس پیمبر وہی ہے زوج بتول  علی کی ذات پر ہی ہل اتی کا سایہ ہے ریاض خلد کے سردار شبر و شبیر  حدیث پاک ہے، خیر الوریٰ کا سایہ ہے سفیر کرب و بلا، زینب حزیں پہ سلام  وہ جس کے عزم پہ خیر النسا " کا سایہ ہے تری دعا کی اجابت میں دیر کیا ہو گی  علی کا نام لے! حاجت روا کا سایہ ہے نجات پائے گا ہر دکھ سے تو نہ رہ ناشاد  کہ تجھ پہ رحمت ارض و سماء کا سایہ ہے mar