Skip to main content

Salam Aqeedat

 Salaam Aqeedat مرے کلام پہ حمد و ثناء کا سایہ ہے  مرے کریم کے لطف و عطاء کا سایہ ہے میں حمد و منقبت و نعت لکھ رہا ہوں،  میرے تخیلات شاه ھدی کا سایہ ہے لکھا ہے حسن جہاں، اُس کو پڑھ چکا ہوں  حسن کیں پہ خامس آل عبا کا سایہ ہے خدا نے ہم کو نوازا حواس خمسہ سے  یہ ہم پہ پنجتن با صفا کا سایہ ہے کوئی مریض ہو لے جا رضا کے روضے پر  وہیں طبیب ہے، دار الشفاء کا سایہ ہے سفر ہو یا ہو حضر مجھ کو کوئی خوف نہیں  کہ مجھ پہ شاہ نجف مرتضی کا سایہ ہے علی امام مرا، اور میں غلام علی  علی کی شان پر تو لافتی کا سایہ ہے علی کا نام تو حرز بدن ہے اپنے لیے  علی کے اسم پہ رب علی کا سایہ ہے ن لطف احمد مرسل بفضل آل رسول  میں خوش نصیب ہوں مجھ پر ہما کا سایہ ہے وہی ہے نفس پیمبر وہی ہے زوج بتول  علی کی ذات پر ہی ہل اتی کا سایہ ہے ریاض خلد کے سردار شبر و شبیر  حدیث پاک ہے، خیر الوریٰ کا سایہ ہے سفیر کرب و بلا، زینب حزیں پہ سلام  وہ جس کے عزم پہ خیر النسا " کا سایہ ہے تری دعا کی اجابت میں دیر کیا ہو گی  علی کا نام لے! حاجت روا کا سایہ ہے نجات پائے گا ہر دکھ سے تو نہ رہ ناشاد  کہ تجھ پہ رحمت ارض و سماء کا سایہ ہے mar

Naat Rasool Maqbool

 Naat Rasool Maqbool

دل میں ترا خیال، تو لب پر سلام ہے
 میرا یہی وظیفہ ہے جو صبح و شام ہے 
یسین کہہ دیا کبھی طہ بتا دیا 
رب کی زباں سے کتنا حسیں تیرا نام ہے 
تجھ کو خدا نے عرش پر مہماں بنا دیا
 کون و مکان میں تو ہی تو عالی مقام ہے 
زیبا زبان حق سے ہے توصیف مصطفی
 قرآن تمام وصف رسول انام ہے ہے 
جس کے دل میں عشق خدا، حب اہلبیت
 اس گل بدن پہ آتش دوزخ حرام ہے 
شمس و قمر نے نور لیا ہے حضور سے 
نور خدا کا جلوہ ز رویش مدام ہے
اسلام کا اصول ہے امن و سلامتی 
امت پہ کی رسول نے حجت تمام ہے
 ایک ایسے دور میں ہمیں جینا پڑا ہے اب 
نے ہاتھ دل پہ ہے، نہ زباں پر لگام ہے
 وابستہ خود کو کیجئے آل رسول سے 
یہ وہ عمل ہے جس کے لیے نقد دام ہے 
حب رسول ہے مرا سرمایہ حیات 
اس کے بغیر جو بھی ہے سرمایہ خام ہے 
دونوں جہاں میں دامن احمد کو تھامئیے
 ناشاد کی طرف سے یہ زریں پیام ہے

اللہ کا بندہ ہوں، گنہگار تو ہوں
 احمد کے نواسے کا عزادار تو ہوں 
" محشر کا مجھے اس لئے کچھ خوف نہیں 
زہرا کی شفاعت کا سزاوار تو ہوں
dil mein tra khayaal, to lab par salam hai
mera yahi wazifa hai jo subah o shaam hai
yaseen keh diya kabhi Taah bta diya
rab ki zuba se kitna hsin tera naam hai
tujh ko kkhuda ne arsh par mehmaan bana diya
kon o makaan mein to hi to aliiiii maqam hai
zaiba zabaan haq se hai tauseef mustafa
quran tamam Wasf rasool Anaam hai hai
jis ke dil mein ishhq kkhuda, hub ahlbit
is Gul badan pay aatish dozakh haraam hai
Shams o Qamar ne noor liya hai huzoor se
noor kkhuda ka jalva zay رویش madaam hai
islam ka usool hai aman o salamti
ummat pay ki rasool ne Hujjat tamam hai aik aisay daur mein hamein jeena para hai ab
ne haath dil pay hai, nah zuba par lagaam hai
wabasta khud ko kijiyej all rasool se
yeh woh amal hai jis ke liye naqad daam hai
hub rasool hai mra sarmaya hayaat
is ke baghair jo bhi hai sarmaya khaam hai
dono jahan mein daman Ahmed ko تھامئیے
Nashad ki taraf se yeh zareen payam hai

Allah ka bandah hon, gunehgaar to hon
Ahmed ke nwase ka azadar to hon" Mahshar ka mujhe is liye kuch khauf nahi
Zohra ki Shafaat ka sazawar to hon

Comments

Popular posts from this blog

300+ Best Quotes in Urdu with Images 2023

300+ Best Quotes in Urdu with Images 2023 Iss Post ma ham apky Urdu kay 300 behtreen or nayaab Quotes share karen gay. Ap tamam se guzarish ha ki is post ko apny friends or family kay sath zaroor share karen. Or hamein shukurya ada karny ka moqa den. shukurya...  

Salam Ba Hazoor Imam Hussain

 Salam Ba Hazoor Imam Hussain مہماں بنا کے گھر سے بلایا حسین کو  پھر کربلا کے بن میں بسایا حسین کو یہ قافلہ تھا کوفے کی جانب رواں دواں  کر کربلا میں گھیر کے لایا حسین کو وہ دلبر بتول تھا اور جان مصطفى  کیا جرم تھا یہی کہ بتایا حسین کو عباس اور قاسم واکبر ہوئے شہید  اصغر نے تیر کھا کے رلایا حسین کو رقم سب چل بسے ظہیر و بریر و حبیب تک  کوئی نہیں رہا تھا سہارا حسین کو تنہا نکل رہا ہے حرم سے علی کا لال  گھیرے ہوئے ہے فوج صف آراء حسین کو وہ جنگ کی، کہ بدر کا منظر دکھا دیا  ہر اک نے الامان پکارا حسین کو اتنے میں ماہ دین گہن میں چلا گی  تیغ و تبر سے تیر سے مارا حسین کو نہر فرات پاس تھی پانی نہیں  پیاسا کیا شہید دل آرا حسین کو اے کربلا حسین نے تجھ کو لہو دیا  تو نے نہ ایک قطرہ پلایا حسین کو  زہرا کے کے گلبدن کا بدن بے کفن کو  تپتی زمین پر نہ چھپایا حسین کا جس دل میں عشق سبط نبی کا سما گیا  اس دل نے پھر کبھی نہ بھلایا حسین ن کو ناشاد ناتواں کو زیارت نصیب  یہ التماس بھیجی ہے مولا حسین کو mehmaan bana ke ghar se bulaya Hussain ko phir karbalaa ke ban mein basaayaa Hussain ko yeh qaafla tha kofe k

Salam Aqeedat

 Salaam Aqeedat مرے کلام پہ حمد و ثناء کا سایہ ہے  مرے کریم کے لطف و عطاء کا سایہ ہے میں حمد و منقبت و نعت لکھ رہا ہوں،  میرے تخیلات شاه ھدی کا سایہ ہے لکھا ہے حسن جہاں، اُس کو پڑھ چکا ہوں  حسن کیں پہ خامس آل عبا کا سایہ ہے خدا نے ہم کو نوازا حواس خمسہ سے  یہ ہم پہ پنجتن با صفا کا سایہ ہے کوئی مریض ہو لے جا رضا کے روضے پر  وہیں طبیب ہے، دار الشفاء کا سایہ ہے سفر ہو یا ہو حضر مجھ کو کوئی خوف نہیں  کہ مجھ پہ شاہ نجف مرتضی کا سایہ ہے علی امام مرا، اور میں غلام علی  علی کی شان پر تو لافتی کا سایہ ہے علی کا نام تو حرز بدن ہے اپنے لیے  علی کے اسم پہ رب علی کا سایہ ہے ن لطف احمد مرسل بفضل آل رسول  میں خوش نصیب ہوں مجھ پر ہما کا سایہ ہے وہی ہے نفس پیمبر وہی ہے زوج بتول  علی کی ذات پر ہی ہل اتی کا سایہ ہے ریاض خلد کے سردار شبر و شبیر  حدیث پاک ہے، خیر الوریٰ کا سایہ ہے سفیر کرب و بلا، زینب حزیں پہ سلام  وہ جس کے عزم پہ خیر النسا " کا سایہ ہے تری دعا کی اجابت میں دیر کیا ہو گی  علی کا نام لے! حاجت روا کا سایہ ہے نجات پائے گا ہر دکھ سے تو نہ رہ ناشاد  کہ تجھ پہ رحمت ارض و سماء کا سایہ ہے mar