Skip to main content

Salam Aqeedat

 Salaam Aqeedat مرے کلام پہ حمد و ثناء کا سایہ ہے  مرے کریم کے لطف و عطاء کا سایہ ہے میں حمد و منقبت و نعت لکھ رہا ہوں،  میرے تخیلات شاه ھدی کا سایہ ہے لکھا ہے حسن جہاں، اُس کو پڑھ چکا ہوں  حسن کیں پہ خامس آل عبا کا سایہ ہے خدا نے ہم کو نوازا حواس خمسہ سے  یہ ہم پہ پنجتن با صفا کا سایہ ہے کوئی مریض ہو لے جا رضا کے روضے پر  وہیں طبیب ہے، دار الشفاء کا سایہ ہے سفر ہو یا ہو حضر مجھ کو کوئی خوف نہیں  کہ مجھ پہ شاہ نجف مرتضی کا سایہ ہے علی امام مرا، اور میں غلام علی  علی کی شان پر تو لافتی کا سایہ ہے علی کا نام تو حرز بدن ہے اپنے لیے  علی کے اسم پہ رب علی کا سایہ ہے ن لطف احمد مرسل بفضل آل رسول  میں خوش نصیب ہوں مجھ پر ہما کا سایہ ہے وہی ہے نفس پیمبر وہی ہے زوج بتول  علی کی ذات پر ہی ہل اتی کا سایہ ہے ریاض خلد کے سردار شبر و شبیر  حدیث پاک ہے، خیر الوریٰ کا سایہ ہے سفیر کرب و بلا، زینب حزیں پہ سلام  وہ جس کے عزم پہ خیر النسا " کا سایہ ہے تری دعا کی اجابت میں دیر کیا ہو گی  علی کا نام لے! حاجت روا کا سایہ ہے نجات پائے گا ہر دکھ سے تو نہ رہ ناشاد  کہ تجھ پہ رحمت ارض و سماء کا سایہ ہے mar

Birds are the beauty of the universe

Birds are the beauty of the universe 

پرندے کائنات کا حسن ہیں

انسان کا پرندوں سے تعلق اتنا ہی پرانا ہے جتنا کہ خود انسان کا انسان سے ، جس طرح حضرت انسان اس کائنات میں اشرف المخلوقات کا درجہ رکھتا ہے اسی طرح پرندے بھی اس کائنات کی خوبصورت مخلوق ہیں ۔ پاکستان میں تقریباً 786 قسم کے پرندے پائے جاتے ہیں ان میں بہت سے پرندے ایسے ہیں جو کبھی کبھار پاکستان آتے ہیں یعنی دوسرے ملکوں سے ہجرت کر کے پاکستان آتے ہیں اور کچھ عرصہ پاکستان میں گزارنے کے بعد اپنے علاقوں کو لوٹ جاتے ہیں یہ مہمان پرندے ہمارے ماحولیاتی حسن کو مزید حسین بناتے ہیں ۔ دور جدید کی مصروف زندگی میں انسان کو جن آوازوں نے سب سے زیادہ متاثر کیا وہ پرندوں کی خوبصورت سریلی آوازیں ہیں جس سے انسان اپنے کئی غم بھول جاتا ہے ۔ گو کہ اب شہری زندگی میں ایسی سریلی آوازوں سے انسان کا واسطہ کم ہی پڑتا ہے لیکن دیہات میں اب بھی پیڑوں کی گھنی چھاؤں میں بیٹھ کر ہم ان خوش الحان پرندوں کی آواز سے مسحور ہوسکتے ہیں ۔ سردیوں کا موسم ہو یا گرمیوں کا، بہار ہو یا خزاں پرندے صبح سویرے اپنی خوبصورت آواز سے لوگوں کو جگاتے ہیں اور صبح ہونے کا پیغام دیتے ہیں ۔ یہی پرندے فضاؤں میں اپنی مسحور کن آوازوں سے رس گھولتے نظر آتے ہیں ۔ پرندے اس کائنات میں خداوند کریم کا ایک حسین تحفہ ہے جب یہ پرندے ہمارے ملک کی آزاد فضاؤں میں اپنے خوبصورت اور رنگ برنگے پروں کو پھیلاتے ہیں تو دیکھنے والوں پر ایک سرور کی کیفیت اور سحر طاری کر دیتے ہیں اور دیکھنے والے اس خوبصورت نظارے کو دیکھ کر 

۔: سردیوں کے آتے ہی سائبریا کے مہمان پرندے بلوچستان کا کا رخ کرتے ہیں ہر سال پرندے سردی سے بچنے کے لیے وسطی ایشیا سے ہجرت کر کے پاکستان اور عراق کے صحرائی ریتلے علاقوں کا رخ کرتے ہیں لیکن یہاں پہنچتے ہی ایک مہلک استقبال پاتے ہیں یعنی یہ معصوم پرندے ریتلے علاقوں میں شکاریوں کے شوق کی بھینٹ چڑھ جاتے ہیں ۔ ۔ آبی آلودگی کو کم کرنے کے لیے بھی موثر اقدامات کرنے چاہئیں

۔: کیونکہ بہت سے آبی پرندوں کی نسل کشی کا سبب سمندر کا آلودہ پانی ہے ساحلی علاقوں میں دریا کے کنارے آبی پرندوں کو چکمہ دے کر پھنسانے کے لیے جال لگائے جاتے ہیں دنیا کا کوئی معاشرہ ایسا نہیں جو پرندے مارنے کا لائسنس آسانی سے دے جیسا کہ ہم دیتے ہیں یہی وجہ ہے کہ ہمارے ملک میں پرندوں کی کچھ قسمیں تیزی سے ناپید ہوتی چلی جارہی ہے پرندے محبت اور وفا کی علامت ہے یہ امن کے پیامبر ہیں کیونکہ تمام سرحدوں سے بالاتر ہوکر ایک سے دوسرے ملک کا سفر کرتے ہیں ہمیں ان پرندوں کی حفاظت کے لیے اپنا کردار ادا کرنا چاہیے اور حکومت کو بھی ان پرندوں کی حفاظت کے لیے موثر اقدامات کرنے ہونگے عوامی سطح پر اس بدنما اور ہلاکت خیز شوق کو خیرباد کہنا ہوگا تاکہ ہم اپنے ماحول کی خوبصورتی کا تحفظ کر سکیں


parinday kaayenaat ka husn hain

insaan ka parindon se talluq itna hi purana hai jitna ke khud insaan ka insaan se, jis terhan hazrat insaan is kaayenaat mein Ashraf almkhloqat ka darja rakhta hai isi terhan parinday bhi is kaayenaat ki khobsorat makhlooq hain. Pakistan mein taqreeban 786 qisam ke parinday paye jatay hain un mein bohat se parinday aisay hain jo kabhi kabhar Pakistan atay hain yani dosray mulkon se hijrat kar ke Pakistan atay hain aur kuch arsa Pakistan mein guzaarne ke baad –apne ilaqon ko lout jatay hain yeh maheman parinday hamaray maholiyati husn ko mazeed Hussain banatay hain. daur jadeed ki masroof zindagi mein insaan ko jin awazon ne sab se ziyada mutasir kya woh parindon ki khobsorat surili aawazian hain jis se insaan –apne kayi gham bhool jata hai. go ke ab shehri zindagi mein aisi surili awazon se insaan ka vaastaa kam hi parta hai lekin dehaat mein ab bhi pairron ki ghani chaon mein baith kar hum un khush Al Haan parindon ki aawaz se mashooor ho saktay hain. sardiyoon ka mausam ho ya garmiyon ka, bahhar ho ya khizaa parinday subah saweray apni khobsorat aawaz se logon ko jagatay hain aur subah honay ka pegham dete hain. yahi parinday fizaon mein apni mashooor kin awazon se ras gholte nazar atay hain. parinday is kaayenaat mein khudawand kareem ka aik Hussain tohfa hai jab yeh parinday hamaray malik ki azad fizaon mein –apne khobsorat aur rang baranghay paron ko pheilatay hain to dekhnay walon par aik suroor ki kefiyat aur sehar taari kar dete hain aur dekhnay walay is khobsorat nazare ko dekh kar

. : sardiyoon ke atay hi sybria ke maheman parinday Balochistan ka ka rukh karte hain har saal parinday sardi se bachney ke liye wasti asia se hijrat kar ke Pakistan aur Iraq ke sahrayi ریتلے ilaqon ka rukh karte hain lekin yahan pahunchte hi aik mohlik istaqbaal paate hain yani yeh masoom parinday ریتلے ilaqon mein shikarion ke shoq ki bhaint charh jatay hain. . aabi aloodgi ko kam karne ke liye bhi mo-asar iqdamaat karne chahiye

. : kyunkay bohat se aabi parindon ki nasal kashi ka sabab samandar ka aaloda pani hai sahili ilaqon mein darya ke kinare aabi parindon ko chakma day kar phansanay ke liye jaal lagaye jatay hain duniya ka koi muashra aisa nahi jo parinday maarny ka licence aasani se day jaisa ke hum dete hain yahi wajah hai ke hamaray malik mein parindon ki kuch kasmain taizi se napaid hoti chali jarahi hai parinday mohabbat aur wafa ki alamat hai yeh aman ke payamabar hain kyunkay tamam sarhadoon se balatar hokar aik se dosray malik ka safar karte hain hamein un parindon ki hifazat ke liye apna kirdaar ada karna chahiye aur hukoomat ko bhi un parindon ki hifazat ke liye mo-asar iqdamaat karne hunge awaami satah par is badnuma aur halakat khaiz shoq ko khirbad kehna hoga taakay hum –apne mahol ki khoubsurti ka tahaffuz kar saken

Comments

Popular posts from this blog

300+ Best Quotes in Urdu with Images 2023

300+ Best Quotes in Urdu with Images 2023 Iss Post ma ham apky Urdu kay 300 behtreen or nayaab Quotes share karen gay. Ap tamam se guzarish ha ki is post ko apny friends or family kay sath zaroor share karen. Or hamein shukurya ada karny ka moqa den. shukurya...  

Salam Ba Hazoor Imam Hussain

 Salam Ba Hazoor Imam Hussain مہماں بنا کے گھر سے بلایا حسین کو  پھر کربلا کے بن میں بسایا حسین کو یہ قافلہ تھا کوفے کی جانب رواں دواں  کر کربلا میں گھیر کے لایا حسین کو وہ دلبر بتول تھا اور جان مصطفى  کیا جرم تھا یہی کہ بتایا حسین کو عباس اور قاسم واکبر ہوئے شہید  اصغر نے تیر کھا کے رلایا حسین کو رقم سب چل بسے ظہیر و بریر و حبیب تک  کوئی نہیں رہا تھا سہارا حسین کو تنہا نکل رہا ہے حرم سے علی کا لال  گھیرے ہوئے ہے فوج صف آراء حسین کو وہ جنگ کی، کہ بدر کا منظر دکھا دیا  ہر اک نے الامان پکارا حسین کو اتنے میں ماہ دین گہن میں چلا گی  تیغ و تبر سے تیر سے مارا حسین کو نہر فرات پاس تھی پانی نہیں  پیاسا کیا شہید دل آرا حسین کو اے کربلا حسین نے تجھ کو لہو دیا  تو نے نہ ایک قطرہ پلایا حسین کو  زہرا کے کے گلبدن کا بدن بے کفن کو  تپتی زمین پر نہ چھپایا حسین کا جس دل میں عشق سبط نبی کا سما گیا  اس دل نے پھر کبھی نہ بھلایا حسین ن کو ناشاد ناتواں کو زیارت نصیب  یہ التماس بھیجی ہے مولا حسین کو mehmaan bana ke ghar se bulaya Hussain ko phir karbalaa ke ban mein basaayaa Hussain ko yeh qaafla tha kofe k

Salam Aqeedat

 Salaam Aqeedat مرے کلام پہ حمد و ثناء کا سایہ ہے  مرے کریم کے لطف و عطاء کا سایہ ہے میں حمد و منقبت و نعت لکھ رہا ہوں،  میرے تخیلات شاه ھدی کا سایہ ہے لکھا ہے حسن جہاں، اُس کو پڑھ چکا ہوں  حسن کیں پہ خامس آل عبا کا سایہ ہے خدا نے ہم کو نوازا حواس خمسہ سے  یہ ہم پہ پنجتن با صفا کا سایہ ہے کوئی مریض ہو لے جا رضا کے روضے پر  وہیں طبیب ہے، دار الشفاء کا سایہ ہے سفر ہو یا ہو حضر مجھ کو کوئی خوف نہیں  کہ مجھ پہ شاہ نجف مرتضی کا سایہ ہے علی امام مرا، اور میں غلام علی  علی کی شان پر تو لافتی کا سایہ ہے علی کا نام تو حرز بدن ہے اپنے لیے  علی کے اسم پہ رب علی کا سایہ ہے ن لطف احمد مرسل بفضل آل رسول  میں خوش نصیب ہوں مجھ پر ہما کا سایہ ہے وہی ہے نفس پیمبر وہی ہے زوج بتول  علی کی ذات پر ہی ہل اتی کا سایہ ہے ریاض خلد کے سردار شبر و شبیر  حدیث پاک ہے، خیر الوریٰ کا سایہ ہے سفیر کرب و بلا، زینب حزیں پہ سلام  وہ جس کے عزم پہ خیر النسا " کا سایہ ہے تری دعا کی اجابت میں دیر کیا ہو گی  علی کا نام لے! حاجت روا کا سایہ ہے نجات پائے گا ہر دکھ سے تو نہ رہ ناشاد  کہ تجھ پہ رحمت ارض و سماء کا سایہ ہے mar